Reasons to visit NWFP (now KPK), Punjab, Sindh and Baluchistan

by on October 7, 2009
in Travel Pakistan

Masjid wazir Khan

NWFP  (KPK-Khyber Pakhtoonkhwah) is nicknamed “the Switzerland of Pakistan” because of its spellbinding beauty. It is a land of mountains covered with Alpine and coniferous forests, sparkling streams, dancing water falls and glaciers. It is guarded by the three mighty mountains the Hindu Kush, Karakoram and the Himalayas. Relics of the Gandhara –Buddhist era are scattered all over the northern areas. So if you are a nature’s freak or interested in mountain climbing, hiking and trekking then do visit the northern areas of Pakistan.

Punjab is famous for its hospitality and historical places. A number of buildings from the Mughal era are found in the plains of Punjab. Punjab is a land of lush green fields. It is also the land of five rivers. The tributaries of the River Indus snake through Punjab.

Sindh has a rich history. The remains of the world’s oldest civilization are found at Moen Jo Daro. Other historical sites include Rani Not Fort, Pucca Qila, Makli Hills Tomb, Chaukhandi Tombs and Shah Jehan Mosque. There are some shrines as well which are thronged by thousands of devotees whole year round. The Karlri Lake, Keenjhar Lake and the Kirthar Natural Park are some places worth seeing.

Karachi the capital of Sindh is a coastal city and a valid reason to visit Sindh. Karachi is the most modern and biggest city of Pakistan. It has a number of buildings from the colonial era. Karachi is famous for its shopping centers and beaches.

Baluchistan is mostly dry but there are some interesting places which allure the tourists. The juniper forests, Hanna Lake, Ziarat, Quetta and Chaman are some places of interest in Baluchistan. There are many beaches in Baluchistan such as Gadani, Somiani etc. The coastal city of Gawadar is being developed with all modern amenities for the future.


Author MairaS:
Webpreneur. CEO ContentCreatorZ Pakistan. Managing Partner Media Marketing Services.
Website:http://www.contentcreatorz.com
Jabber:mairahashmi@gmail.com
None found.

Comments

One Response to “Reasons to visit NWFP (now KPK), Punjab, Sindh and Baluchistan”
  1. Ibne Maryam says:

    پاکستان کی ثقافت
    ابنِ مریم

    پاکستان کی ثقافت اور معاشرت متعدد نسلی گروہوں پر مشتمل ہے.مشرق میں پنجابی، پوٹھوہاری، کشمیری اور سندھی;
    جنوب میں مہاجراور مکرانی؛ مغرب میں بلوچ، هزاره اور پشتون؛ اور شمال میں بلتی، شیناکی اور بروشی نسلیں آباد ہیں.
    پاکستان کے تمام نسلی گروہوں کی ثقافت آس پاس کی ثقافتوں مثلاْ جنوبی ایشیائی، ترکی اور وسطی ایشیائی اور مغربی
    ایشیائی ثقافتوں سے بہت متاثر ہیں۔ خطے نے جنوبی ایشیا، مغربی ایشیا، مشرق وسطی اور وسطی ایشیا کے جغرافیہ کے
    اندر ایک الگ پہچان بنائی ہے اور اسکی حیثیت افغانستان سے مطابقت رکھتی ہے. پاکستان جنوبی ایشیا کا سب سے پہلا
    علاقہ تھا جواسلام کے زیرِاثر آیا تھا اور اس طرح مشرق کے علاقوں سے تاریخی طور پر الگ، اسلامی شناخت اپنائی.

    پاکستان کی زبانیں اور بولیا ں

    پاکستان کی قومی زبان اردو ہے، جو انگریزی کے ساتھ سرکاری زبان ہے. تقریبا تمام پاکستانی زبانیں انڈو ایرانی گروپ
    سے تعلق رکھتے ہیں اور انکے قوائد دوڑاوڑی ہیں سوائے بلو بلو کی جس کے قوائد فارسی سے ملیں. پاکستان میں کئی مادری زبانیں بولی جاتی ہیں جن میں پنجابی، سرائیکی، پشتو، سندھی، بلوچی، کشمیری، ھندکو، براویوی، شینا، بلتی، مارواڑی، واخانی اور بروشکی شامل ہیں. ان میں سے، پنجابی، پشتو، پشتو، سندھی اور بلوچی صوبائی زبانیں ہیں. تقریبا تمام پاکستانی زبانیں انڈو ایرانی گروپ سے تعلق رکھتےہیں اورانکے قوائد دوڑاوڑی ہیں سوائےبلوچی کےجس کے قوائد فارسی سےملتےہیں.

    اردو , پاکستان کی قومی زبان

    پاکستان کی قومی زبان اردو ہے، جو انگریزی کے ساتھ سرکاری زبان ہے. 2015 میں،پاکستان حکومت نے اردو کو سرکاری
    زبان بنانے اور انگریزی کو دوسری سرکاری زبان کے طور پر ختم کرنے کی منصوبہ بندی کا اعلان کیا تھا. اردو زبان
    مقامی سنسکرت اور دراوڑی زبانوں میں عربی، فارسی اور ترکی کے الفاظ اور اصطلاحات کے اختلاط سے وجود میں آئی.
    ابتدائی طور پر دلی اور ارد گرد میں بولی جا تی تھی مگر رفتہ رفتہ یہ برصغیرجنوبی ایشیا کی عوامی زبان بن گئی.

    اردو زبان تعلیمی اور ادبی خزانہ سے مالامال ہے. مرزا غالب، میر تقی میر، خواجه میر درد، علامہ اقبال اور فیض احمد
    فیض اردو کے مشہور شاعر ہیں. سر سید احمد خان، ڈپٹی نذیر احمد، مولوی عبدالحق اور منشی پریم چند اردو کے کچھ
    مشہور مصنفین ہیں. جدید ادب میں ابن انشا، اشفاق ا … ……. اور پروین شاکر اردو ادب کے کچھ مشہورنام ہیں.
    اردو زبان، سائنسی، مذہبی,ادبی اور تعلیمی تحریروں سے مالامال ہے.

Share Your Thoughts

You might also likeclose